کپاس

Gossypium


پانی دینا
متوسط

زراعت
براہ راست بوائی

کٹائی
180 - 215 دن

مزدور
کم

سورج کی روشنی
مکمل سورج

pH کی قدر
5.8 - 8

درجہ حرارت
15°C - 37°C

زرخیزکاری
متوسط


کپاس

تعارف

کپاس کا پودا میلویسی فیملی کی ایک جھاڑی ہے جو امریکہ، آسٹریلیا، افریقہ اور بھارت کے منقطہ حارہ اور جزوی منقطہ حارہ کے خطوں کی مقامی ہے۔ یہ فائبر اور آئل سیڈ فصل کی وجہ سے 90 سے زائد ممالک میں اگائی جاتی ہے۔ جنگلی کپاس کی انواع کے سب سے زیادہ تنوع میکسکو، آسٹریلیا اور افریقہ میں پائے جاتے ہیں۔

مشاورت

مفید تجاویز دیکھنے کیلئے اپنا نشوونما کا مرحلہ منتخب کریں!

اپنے موسم کی تیاری

آبپاشی کے لیے تجویز کردہ اوقات
بنیادی عملِ ذرخیزی کیا ہے؟

دیکھ بھال

پودا لگانے سے پہلے تقریباً 35 سینٹی میٹر کی گہرائی تک ہل چلانا تجویز کیا جاتا ہے۔ اس سے پودے کی باقیات کو مٹی میں ضم کرنے میں بھی مدد ملتی ہے جو مٹی کے ٹیکسچر کو بہتر بناتا ہے۔ فالتو جھاڑیوں کو باقاعدگی سے چیک کرنا چاہیئے اور کٹائی کے بعد کھیت میں فوراً دوبارہ ہل چلانا چاہیئے تاکہ اگلی بہار میں بیج بونے کیلئے خالی کھیت یقینی ہو سکے۔ بیجوں کو بونے کیلئے اچھی گہرائی 4 تا 5 سینٹی میٹر ہے۔ فی ہیکٹر تقریباً 25 کلوگرام کپاس کے بیج تجویز کردہ ہیں جبکہ تقریباً 200 کلوگرام متوازن کھاد فی ہیکٹر کا اوسط اطلاق تجویز کیا جاتا ہے۔ بونے کی قطار میں، بیجوں کے درمیان اوسطاً 7.5 سینٹی میٹر کا فاصلہ رکھنا چاہیئے۔ فی ہکڑ کپاس 1 تا 2 صحت مند چھتے لگانا بھی مفید ہے۔ کم بارش والے علاقوں میں، کپاس کے کھیتوں کو بوائی سے پہلے آبیاری کرنا اور پھول کھلنے کے بعد ڈوڈے پھٹنے تک آبیاری کرنا چاہیئے۔

مٹی

کپاس تقریباً ہر قسم کی مٹی میں اگ سکتی ہے، بشرطیکہ اچھی طرح نکاسی والی ہو۔ تاہم، زیادہ پیداوار حاصل کرنے کیلئے، کافی چکنی مٹی، نامیاتی مواد اور نائٹروجن اور فاسفورس کے متوسط ارتکاز والی مٹی مثالی ہے۔ ایک ہلکا سا ڈھلان بھی مددگار ثابت ہو سکتا ہے جو کنٹرول شدہ سمت میں پانی کی نکاسی کو پروموٹ کرے۔ اچھی کپاس کی نشوونما کیلئے 5.8 تا 8 کے درمیان مٹی کا پی ایچ درکار ہے جب کہ 6 تا 6.5 موزوں رینج ہے۔

آب و ہوا

کپاس کے پودے کو انجماد سے پاک ایک طویل عرصہ، بہت سی گرمی اور بہت سی سورج کی روشنی درکار ہے تاکہ اس کی موزوں نشوونما ہو سکے۔ گرم اور نم موسم جس میں 60 سے 120 سینٹی میٹر تک متوسط بارش ہو، ترجیح کردہ ہے۔ اگر مٹی کا درجہ حرارت 15 ڈگری سینٹی گریڈ سے کم ہو تو صرف کچھ کپاس کے بیج ہی نشوونما پا سکیں گے۔ فعال نشوونما کے دوران، مثالی ہوا کا درجہ حرارت 21 تا 37 ڈگری سینٹی گریڈ ہونا چاہیئے۔ متوسط کپاس کا پودا بغیر زیادہ نقصان کے مختصر عرصوں کیلئے 43 ڈگری سینٹی گریڈ تک کے درجہ حرارتوں میں زندہ رہ سکتا ہے۔ پختہ ہونے کے مرحلے (گرمی) اور کٹائی کے دنوں کے درمیان (خزاں) کثرت سے بارشیں کپاس کی زراعت میں پیداوار کو کم کر دیتی ہیں۔

ممکنہ بیماریاں

نشوونما کا مرحلہ منتخب کر کے دیکھیں کہ اس عرصے کے دوران کون سی بیماریاں آپ کی فصل کو نقصان پہنچا سکتی ہیں۔

کپاس

کپاس

اگانے کے بارے میں سبھی معلومات پلانٹکس میں حاصل کریں!


کپاس

Gossypium

کپاس
ابھی پلانٹکس استعمال کریں!

تعارف

کپاس کا پودا میلویسی فیملی کی ایک جھاڑی ہے جو امریکہ، آسٹریلیا، افریقہ اور بھارت کے منقطہ حارہ اور جزوی منقطہ حارہ کے خطوں کی مقامی ہے۔ یہ فائبر اور آئل سیڈ فصل کی وجہ سے 90 سے زائد ممالک میں اگائی جاتی ہے۔ جنگلی کپاس کی انواع کے سب سے زیادہ تنوع میکسکو، آسٹریلیا اور افریقہ میں پائے جاتے ہیں۔

اہم حقائق

پانی دینا
متوسط

زراعت
براہ راست بوائی

کٹائی
180 - 215 دن

مزدور
کم

سورج کی روشنی
مکمل سورج

pH کی قدر
5.8 - 8

درجہ حرارت
15°C - 37°C

زرخیزکاری
متوسط

مشاورت

مفید تجاویز دیکھنے کیلئے اپنا نشوونما کا مرحلہ منتخب کریں!

اپنے موسم کی تیاری

آبپاشی کے لیے تجویز کردہ اوقات
بنیادی عملِ ذرخیزی کیا ہے؟
کپاس

کپاس

اگانے کے بارے میں سبھی معلومات پلانٹکس میں حاصل کریں!

دیکھ بھال

پودا لگانے سے پہلے تقریباً 35 سینٹی میٹر کی گہرائی تک ہل چلانا تجویز کیا جاتا ہے۔ اس سے پودے کی باقیات کو مٹی میں ضم کرنے میں بھی مدد ملتی ہے جو مٹی کے ٹیکسچر کو بہتر بناتا ہے۔ فالتو جھاڑیوں کو باقاعدگی سے چیک کرنا چاہیئے اور کٹائی کے بعد کھیت میں فوراً دوبارہ ہل چلانا چاہیئے تاکہ اگلی بہار میں بیج بونے کیلئے خالی کھیت یقینی ہو سکے۔ بیجوں کو بونے کیلئے اچھی گہرائی 4 تا 5 سینٹی میٹر ہے۔ فی ہیکٹر تقریباً 25 کلوگرام کپاس کے بیج تجویز کردہ ہیں جبکہ تقریباً 200 کلوگرام متوازن کھاد فی ہیکٹر کا اوسط اطلاق تجویز کیا جاتا ہے۔ بونے کی قطار میں، بیجوں کے درمیان اوسطاً 7.5 سینٹی میٹر کا فاصلہ رکھنا چاہیئے۔ فی ہکڑ کپاس 1 تا 2 صحت مند چھتے لگانا بھی مفید ہے۔ کم بارش والے علاقوں میں، کپاس کے کھیتوں کو بوائی سے پہلے آبیاری کرنا اور پھول کھلنے کے بعد ڈوڈے پھٹنے تک آبیاری کرنا چاہیئے۔

مٹی

کپاس تقریباً ہر قسم کی مٹی میں اگ سکتی ہے، بشرطیکہ اچھی طرح نکاسی والی ہو۔ تاہم، زیادہ پیداوار حاصل کرنے کیلئے، کافی چکنی مٹی، نامیاتی مواد اور نائٹروجن اور فاسفورس کے متوسط ارتکاز والی مٹی مثالی ہے۔ ایک ہلکا سا ڈھلان بھی مددگار ثابت ہو سکتا ہے جو کنٹرول شدہ سمت میں پانی کی نکاسی کو پروموٹ کرے۔ اچھی کپاس کی نشوونما کیلئے 5.8 تا 8 کے درمیان مٹی کا پی ایچ درکار ہے جب کہ 6 تا 6.5 موزوں رینج ہے۔

آب و ہوا

کپاس کے پودے کو انجماد سے پاک ایک طویل عرصہ، بہت سی گرمی اور بہت سی سورج کی روشنی درکار ہے تاکہ اس کی موزوں نشوونما ہو سکے۔ گرم اور نم موسم جس میں 60 سے 120 سینٹی میٹر تک متوسط بارش ہو، ترجیح کردہ ہے۔ اگر مٹی کا درجہ حرارت 15 ڈگری سینٹی گریڈ سے کم ہو تو صرف کچھ کپاس کے بیج ہی نشوونما پا سکیں گے۔ فعال نشوونما کے دوران، مثالی ہوا کا درجہ حرارت 21 تا 37 ڈگری سینٹی گریڈ ہونا چاہیئے۔ متوسط کپاس کا پودا بغیر زیادہ نقصان کے مختصر عرصوں کیلئے 43 ڈگری سینٹی گریڈ تک کے درجہ حرارتوں میں زندہ رہ سکتا ہے۔ پختہ ہونے کے مرحلے (گرمی) اور کٹائی کے دنوں کے درمیان (خزاں) کثرت سے بارشیں کپاس کی زراعت میں پیداوار کو کم کر دیتی ہیں۔

ممکنہ بیماریاں

نشوونما کا مرحلہ منتخب کر کے دیکھیں کہ اس عرصے کے دوران کون سی بیماریاں آپ کی فصل کو نقصان پہنچا سکتی ہیں۔