سرغو

Sorghum bicolor


پانی دینا
متوسط

زراعت
براہ راست بوائی

کٹائی
100 - 105 دن

مزدور
متوسط

سورج کی روشنی
مکمل سورج

pH کی قدر
5.5 - 8.5

درجہ حرارت
15°C - 40°C

زرخیزکاری
متوسط


سرغو

تعارف

گھاس کی نسل دو رنگ والی جوار کو افریقہ میں کاشت کیا جاتا تھا اور اب دنیا بھر میں گرم اور ٹھنڈے علاقوں میں نشوونما پاتی ہے۔ اناج کا بنیادی استعمال غذا، جانوروں کی غذا، اور حیاتیاتی ایندھن کی پیداوار کے طور پر ہے۔ جوار زیادہ پیداوار والی فصل کے طور پر اہم کردار ادا کرتی ہے اور اگرچہ بار بار کٹائی بھی کیا جائے ، تب بھی یہ عام طور پر سالانہ اگائی جاتی ہے۔

مشاورت

مفید تجاویز دیکھنے کیلئے اپنا نشوونما کا مرحلہ منتخب کریں!

اپنے موسم کی تیاری

حیاتیاتی کھاد کے فوائد
کھیت کی تیاری کے دوران باڑے کی کھاد کا اطلاق کریں

دیکھ بھال

کیڑوں اور گھاس کو کم کرنے کے لیے بیج بونے سے پہلے کھیتوں میں ہل چلائیں۔ مٹی میں ہل چلانا بیج کی نشوونما کو بڑھاتا، مٹی کے ڈھانچوں کو بہتر اور کٹاو کو بچاتا ہے۔ جوار زیادہ ٹھنڈ کے لیے بہت حساس ہے تو بیج بونے کا عمل آخری ٹھنڈ کے بعد ہی کیا جانا چاہیے۔ اس کے علاوہ، بیجوں کو بڑھنے کے لیے کچھ حد تک نمی کی ضرورت ہوتی ہے۔ پودے لگانے کے دوران خشک سالی بیج کے بڑھنے کی شرح کو کم کرتا ہے۔

مٹی

مضبوط جوار کی فصل عام طور پر مٹی کی زیادہ مواد کے ساتھ والی ہلکی مٹی میں نشوونما پاتی ہے لیکن یہ ریتلی مٹی میں بھی نشوونما پا سکتی ہے۔ یہ پی ایچ کی زیادہ سطح پر بھی متحمل رہتی ہے اور الکیلائن مٹی میں بھی نشوونما پاتی ہے۔ پودے زیادہ پانی اور خشک سالی میں کچھ حد تک کھڑے رہتے ہیں لیکن اچھی نکاسی والی مٹی میں بہتر طور پر نشوونما پاتے ہیں۔

آب و ہوا

جوار دن کے وقت 27-30 ڈگری سینٹی گریڈ والے گرم علاقوں میں بہتر طور پر نشوونما پاتی ہے۔ اگر اس کی جڑیں بہتر طور پر نشوونما پالیں تو یہ فصل خشک سالی میں بھی مضبوط فصل کے طور پر کھڑی رہتی ہے اور جب حالات سازگار ہوں تو یہ اپنی نشوونما دوبارہ سے بڑھاتی ہے۔ گرم اور ٹھنڈے علاقوں میں جوار کو 2300 میٹر کی بلندی اُگایا جا سکتا ہے۔ پانی کی ضروریات کاشت پر منحصر ہونے کی وجہ سے مختلف ہوتی ہیں لیکن عال طور پر مکئی سے کم ہی ہوتی ہے۔

ممکنہ بیماریاں

نشوونما کا مرحلہ منتخب کر کے دیکھیں کہ اس عرصے کے دوران کون سی بیماریاں آپ کی فصل کو نقصان پہنچا سکتی ہیں۔

سرغو

سرغو

اگانے کے بارے میں سبھی معلومات پلانٹکس میں حاصل کریں!


سرغو

Sorghum bicolor

سرغو
ابھی پلانٹکس استعمال کریں!

تعارف

گھاس کی نسل دو رنگ والی جوار کو افریقہ میں کاشت کیا جاتا تھا اور اب دنیا بھر میں گرم اور ٹھنڈے علاقوں میں نشوونما پاتی ہے۔ اناج کا بنیادی استعمال غذا، جانوروں کی غذا، اور حیاتیاتی ایندھن کی پیداوار کے طور پر ہے۔ جوار زیادہ پیداوار والی فصل کے طور پر اہم کردار ادا کرتی ہے اور اگرچہ بار بار کٹائی بھی کیا جائے ، تب بھی یہ عام طور پر سالانہ اگائی جاتی ہے۔

اہم حقائق

پانی دینا
متوسط

زراعت
براہ راست بوائی

کٹائی
100 - 105 دن

مزدور
متوسط

سورج کی روشنی
مکمل سورج

pH کی قدر
5.5 - 8.5

درجہ حرارت
15°C - 40°C

زرخیزکاری
متوسط

مشاورت

مفید تجاویز دیکھنے کیلئے اپنا نشوونما کا مرحلہ منتخب کریں!

اپنے موسم کی تیاری

حیاتیاتی کھاد کے فوائد
کھیت کی تیاری کے دوران باڑے کی کھاد کا اطلاق کریں
سرغو

سرغو

اگانے کے بارے میں سبھی معلومات پلانٹکس میں حاصل کریں!

دیکھ بھال

کیڑوں اور گھاس کو کم کرنے کے لیے بیج بونے سے پہلے کھیتوں میں ہل چلائیں۔ مٹی میں ہل چلانا بیج کی نشوونما کو بڑھاتا، مٹی کے ڈھانچوں کو بہتر اور کٹاو کو بچاتا ہے۔ جوار زیادہ ٹھنڈ کے لیے بہت حساس ہے تو بیج بونے کا عمل آخری ٹھنڈ کے بعد ہی کیا جانا چاہیے۔ اس کے علاوہ، بیجوں کو بڑھنے کے لیے کچھ حد تک نمی کی ضرورت ہوتی ہے۔ پودے لگانے کے دوران خشک سالی بیج کے بڑھنے کی شرح کو کم کرتا ہے۔

مٹی

مضبوط جوار کی فصل عام طور پر مٹی کی زیادہ مواد کے ساتھ والی ہلکی مٹی میں نشوونما پاتی ہے لیکن یہ ریتلی مٹی میں بھی نشوونما پا سکتی ہے۔ یہ پی ایچ کی زیادہ سطح پر بھی متحمل رہتی ہے اور الکیلائن مٹی میں بھی نشوونما پاتی ہے۔ پودے زیادہ پانی اور خشک سالی میں کچھ حد تک کھڑے رہتے ہیں لیکن اچھی نکاسی والی مٹی میں بہتر طور پر نشوونما پاتے ہیں۔

آب و ہوا

جوار دن کے وقت 27-30 ڈگری سینٹی گریڈ والے گرم علاقوں میں بہتر طور پر نشوونما پاتی ہے۔ اگر اس کی جڑیں بہتر طور پر نشوونما پالیں تو یہ فصل خشک سالی میں بھی مضبوط فصل کے طور پر کھڑی رہتی ہے اور جب حالات سازگار ہوں تو یہ اپنی نشوونما دوبارہ سے بڑھاتی ہے۔ گرم اور ٹھنڈے علاقوں میں جوار کو 2300 میٹر کی بلندی اُگایا جا سکتا ہے۔ پانی کی ضروریات کاشت پر منحصر ہونے کی وجہ سے مختلف ہوتی ہیں لیکن عال طور پر مکئی سے کم ہی ہوتی ہے۔

ممکنہ بیماریاں

نشوونما کا مرحلہ منتخب کر کے دیکھیں کہ اس عرصے کے دوران کون سی بیماریاں آپ کی فصل کو نقصان پہنچا سکتی ہیں۔